کمر درد

کمر درد کوئی بیماری نہیں ہے۔ یہ آج کی تیز رفتار زندگی کی دین ہے۔  ورزش کی غیر موجودگی میں ، غلط طریقے سے اٹھنے بیٹھنے اور چلنے سے بھی کمر درد ہوتا ۔British Medical Journal نے 13کلینیکل تجربات میں یہ دیکھا کہ کمر کے درد کے لئے یہ دوائی یا توبہت ہی کم یا پھربالکل بھی نہیں اثر کرتی جبکہ یہ جگر کو شدید نقصان پہنچاتی ے paracetmol

European Spine Journal میں شائع ہونے والی تحقیق میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ کچھ انٹی بائیوٹک کمر کے دردمیں مفید واقع ہوئی ہیں. پروفین اور ایسپرین صرف اسی صورت میں لی جائے جب پیراسٹامول کام کرنا چھوڑ دے۔اس کی وجہ یہ ہے کہ موخر الذکر ادویات ہمارے معدے کے لئے انتہائی نقصان دہ ہیں اور جوں جون عمر بڑھتی ہے ان کے نقصانات بھی زیادہ ہوتے جاتے ہیںجبکہ ان کی وجہ سے دل کے دورے کے امکانات بھی بڑھ جاتے ہیں۔

کریموں کے استعمال کا ایک فائد ہوتا ہے کہ یہ معدے کو نقصان نہیں پہنچاتیں لیکن اس سے ہماری جلد پر اثرات مرتب ہوتے ہیں۔ماہرین کا کہنا ہے کہ ایسے جیل یا کریمیں جن میں آئی بو پروفین اور ایسپرین ہوتی ہے وہ کچھ نہ کچھ اثر دکھاتی ہیں۔

کمر درد سے بچائو کی تدابیر

٭کمر سیدھی رکھیں٭کمر گرم رکھیں
کمر درد سے بچائو کے سنہری اصول ہیں

کمر سیدھی رکھیں
کمر درد کے مریض کو کوشش کرنی چاہیے کہ اپنا سر اونچا، کندھے اوپر اور سیدھے اور سینہ ابھار کر رکھے۔ اس طرح اس کی پوری کمر سیدھی رہے گی اور درد میں بھی کمی رہے گی۔ اگر اس کی کمر ڈھیلی اور جھکی ہوتو کمر درد دوبارہ شروع ہو سکتا ہے اور بڑھ بھی سکتا ہے۔ اس لیے ہر حالت میں کوشش کریں کہ کمر سیدھی رہے۔
کمر گرم رکھیں
ہمیشہ لمبی شرٹ ہی استعمال کریں۔ چھوٹی شرٹ اوپر اٹھ جاتی ہے، جس سے کمر کو ہوا لگ جاتی ہے اس سے درد دوبارہ شروع ہو جاتا ہے۔ رات سوتے وقت بھی لمبی شرٹ استعمال کریں۔

refrance.superhomeo.facebook

Leave a reply

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>

Copyright © 2014 All rights Reserved DrFaiza.SaHashmi.com